0

حکومت شہباز شریف سے بات چیت کے لئے تیار آج کی سب سے بڑی خبرآگئی

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کا کہنا ہے کہ شہبازشریف اگر بات کرنا چاہیں تو حکومت کے دروازے کھلے ہیںاسلام آباد میں پریس بریفنگ کے دوران شیخ رشید نے کہا کہ پاکستان نے افغان سفیر کی بیٹی کے اغوا سے متعلق تحقیقات مکمل کرلی ہے، اس کیس میں افغان تحقیقاتی ٹیم آئی ہے، ڈپلو میٹک انکلیو کو محفوظ اور جدید بنانے کے لیے ہدایات کی ہیں، سفارتی علاقے میں 190 کیمرے لگائے جائیں گے۔شیخ رشید نے کہا کہ پاک فوج نے افغان سرحد پر باڑ لگارکھی ہے.

پاکستان میں افغان مہاجرین نہیں آرہے اور نہ ہی طالبان موجود ہیں، 108 لوگ بلوچستان کے راستے پاکستان آئے ہیں، پاکستان آنے والے وہی لوگ ہیں جو یہاں سے گئے تھے۔وفاقی وزیر نے کہا کہ نادرا نے کورونا ویکسینیشن سرٹیفیکیٹ جاری کرنا شروع کر دیئے ہیں، بیرون ملک سفر کرنے والوں کو سرٹیفیکیٹ کی سہولت دی جائے گی، 64 ممالک کو نادرا کے سسٹم سے لنک کیا جا رہا ہے، پیسے لے کر جعلی شناختی کارڈ بنانے والے نادرا میں نہیں رہیں گے.

جعلی شناختی کارڈ بنانے والی کالی بھیڑوں کو نکالیں گے، کرپشن کے خاتمے کے لیے آن لائن ویزا سسٹم شروع کیا گیا ہے، ملک میں بغیر ویزے ہزاروں لوگ چھپے ہوئے ہیں، یہ لوگ آن لائن ویزا اپلائی کریں۔شیخ رشید نے کہا کہ عمران خان کو (ن) لیگ اور پیپلزپارٹی سے کوئی خطرہ نہیں ، (ن) لیگ کو اس کی اپنی پالیسی سے نقصان پہنچا ہے، (ن) لیگ اور شین لیگ کے درمیان آپس میں مفاہمت اور مزاحمت کی جنگ جاری ہے، ان کا کوئی سیاسی مستقبل نہیں، یہ اپنی انگلیاں خود کاٹیں گے۔ شہبازشریف اگر بات کرنا چاہیں تو حکومت کے دروازے کھلے ہیں، وہ ماضی بھلا کر آئیں، سیاست میں دروازے بند نہیں ہوتے

۔شیخ رشید نے کہا کہ نورمقدم کیس کے تمام ملزمان کو گرفتار کیا گیا ہے، ملزم ظاہر جعفر کے والد اور ڈرائیور کو بھی اندر کیا ہے، مجھے امید ہے ظاہر جعفر کو سزائے موت ہوگی۔محرم الحرام کے حوالے سے شیخ رشید احمد نے کہا کہ چاہتے ہیں کوئی کسی کے عقیدے کو نہ چھیڑے اوراپنا عقیدہ نہ چھوڑے، محرم الحرام میں ہر صورت امن و امان برقرار رہے گا، محرم الحرام سے متعلق جمعرات کو اہم اجلاس طلب کرلیاہے، اجلاس میں چیف سیکرٹریز اور آئی جی شریک ہوں گے۔وفاقی وزیر نے کہا کہ اسلام آباد میں نالوں کے اردگرد غیر قانونی تعمیرات گرانے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے، اسلام آباد کے سیکٹر ای الیون میں سیلاب آیا لیکن ہمارے پاس ریسکیو ٹیم نہیں تھی، اسلام آباد میں نالوں سے متعلق سی ڈی اے چیئرمین کو بھی ہدایت جاری کردی ہے کہ تمام نالوں پر تعمیرات 30اگست تک کلیئر ہونے چاہییں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں