0

خورشید شاہ میدان میں کود پڑے حکومت کے تمام مسائل کا ایک حل پیش کر دیا

سکھر (مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما خورشید شاہ نے کہا ہے کہ حکومت پہلی فرصت میں حزب اختلاف کو اعتماد میں لے۔ انہوںنے سکھر کی احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ میں پارلیمنٹ سے مایوس ہوں اور ملک کے حالات ٹھیک نہیں ہیں۔انہوں نے کہا کہ قوم مایوس ہو چکی ہے مگر کہتا ہوں پارلیمنٹ سے نا امید نہیں ہونا چاہیے، مجھے پارلیمنٹ کی بالادستی کی بات کرنے کی سزا ملی ہے۔

انہوںنے کہا کہ دھماکے ہو رہے ہیں اور عوام خوفزدہ ہے۔ اس وقت مل کر بات کرنے کی ضرورت ہے اور حکومت کو چاہیے کہ وہ پہلی فرصت میں حزب اختلاف کو اعتماد میں لے۔انہوں نے کہا کہ ہمیں تمام پڑوسی ممالک کے حالات کو نظر انداز نہیں کرنا چاہئے۔ پیپلز پارٹی رہنما نے کہا کہ آج ملک میں ہر شخص 2 لاکھ روپے کا مقروض ہے۔ حکومت اور حزب اختلاف کو اپنی اپنی جگہ مضبوط ہونا چاہیے اور ہمیں کوشش کر کے گرے لسٹ سے نکلنا چاہیے یہ کوئی اچھی خبر نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ میں 32 سال کرپشن کے خلاف لڑا لیکن اس کی سزا مجھے دی جا رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم زراعت کے ذریعے ہی ملک کی معیشت بہتر کرسکتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں