0

اسحاق ڈار اور نواز شریف کی تقاریر پر پابندی ، درخواست پر جسٹس اطہر من اللہ نے فیصلہ سنا دیا ، عدالت نے ن لیگ کو بڑ اسرپرائز دے دیا

اسلام آباد (ویب ڈیسک ) اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے نواز شریف اور اسحاق ڈار کی تقاریر ٹی وی پر نشر کرنے پر پابندی کے خلاف درخواست کی سماعت میں کہا کہ عدالت مفرور ملزمان کو ریلیف نہیں دے سکتی۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ اگر پیمرا کی پابندی کو ختم کیا گیا تو ہر مفرور چاہے گا اسے ایئر ٹام دیا جائے۔ واضح رہے ٹی وی پر تقاریر نشر کرنے کے حوالے سے درخواست ہیومن رائٹس کمیشن آف پاکستان، پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس اور صحافیوں کی جانب سے دائر کی گئی ہے۔ جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ
حکومت نے مفرور کو بیرون ملک جانے کی اجازت دی مگر الزام عدلیہ پر لگا۔ عدالت نے درخواست گزار کے وکیل سے کہا کہ وہ آئندہ سماعت پر درخواست کے قابل سماعت ہونے سے متعلق دلائل دیں۔ انہوں نے وکیل سے استفسار کیا کہ آپ کس کیلئیے ریلیف مانگ رہے ہیں؟ جس پر درخواست گزار کے وکیل سلمان اکرم راجہ نے کہا کہ ہم عوامی مفاد کیلئے ریلیف مانگ رہے ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں