0

حکومت کی کامیاب معاشی حکمت عملی دو سال میں کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کم کر کے 20ارب ڈالر سے کہاں تک لایا گیا پاکستانیوں کو نا قابل یقین خوشخبری سنا دی گئی

اسلام آباد(ویب ڈیسک)مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ نے کہ ہے کہ گزشتہ چار مہینوں میں حکومت نے کوئی قرض نہیں لیا، روپے کی قدر مستحکم ہوئی، سٹیٹ بینک کے ذخائر 13ارب ڈالر ہیں۔مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ معاشی بحران کی وجہ سے آئی ایم ایف کے پاس جانا پڑا ہے ، آئی ایم ایف کا وفد چند ہفتوں میں پاکستان کا دورہ کرے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف پروگرام جلد مکمل آن ٹریک ہو گا۔ آئی ایم ایف کے ساتھ انڈرسٹینڈنگ کے ساتھ چلیں گے۔

مشیر خزانہ نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف نے قرض پروگرام کے علاوہ پاکستان کو مراعات دی ہیں۔معیشت کی ترقی کے لیے کاروباری طبقے کو مراعات دی گئیں۔ان کا کہناتھا کہ تاریخ میں پہلی بارایک کروڑ پچاس لاکھ سے زائد لوگوں کی مالی مدد کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ آٹو موبائل اور ٹیکسٹائل کے شعبے میں تیزی سے بہتری آرہی ہے۔ دو سال میں کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کم کر کے 20ارب ڈالر سے3ارب ڈالرلایاگیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں