0

یہ ہے نا حقیقی تبدیلی چلو (ملک کو ) سرسبز بنائیں درخت کاٹنے پراتنی کڑی سزا کہ کوئی بھی غلطی سے بھی یہ کام کر نے کا سوچے گا بھی نہیں

ریاض(ویب ڈیسک) سعودی عرب میں اب قدرتی ماحول کو نقصان پہنچانے اور درخت کاٹنے پر سخت سزاؤں کا اعلان کیا گیا ہے، یہ سزا زیادہ سے زیادہ 10 برس قید اور تین کروڑ سعودی ریال جرمانے کی صورت میں بھی لاگو کی جاسکتی ہے۔حال ہی میں سعودی عرب نے 2030 سعودی عرب وژن کا منصوبہ بنایا ہے جس کے تحت ملک میں ماحولیاتی پائیدار ترقی کو یقینی بنائے جائے گا۔ پہلا منصوبہ اپریل 2021 تک ختم ہوگا جسے منصوبے کو ’چلو (ملک کو ) سرسبز بنائیں‘ کا نام دیا گیا ہے۔’ درختوں کا کاٹنے، جڑی بوٹیوں، نباتات اور پودوں کو جڑ سے اکھاڑنے، پتوں اور تنوں کو نوچنے، چیرنے اور چھیلنے، انہیں منتقل کرنے اور ان کی مٹی کو ہٹانے،‘ والے مجرموں کو زیادہ سے زیادہ سزا اور جرمانہ عائد کیا جائے گا،‘ سعودی عوامی قانون ساز ادارے نے اپنی ایک ٹویٹ میں کہا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں