0

مسلمان خواجہ سراؤں کے لیے پہلے مدرسے نے کام شروع کر دیا یہ مدرسہ کہاں واقعہ ہے تفصیلات جانئے

ڈھاکہ(ویب ڈیسک)بنگلہ دیش میں گزشتہ روز مسلمان خواجہ سراؤں کے لیے پہلے مدرسے کا افتتاح کردیا گیا جبکہ مدرسے کے قیام کو معاشرے میں امتیازی اقلیت کو ضم کرنے کی طرف پہلا قدم قرار دیا گیا ہے۔مسلمان خواجہ سراؤں کے اس خصوصی مدرسے کو بنگلادیش کے دارلحکومت ڈھاکا کے مضافات میں عبدالرحمٰن آزاد کی سربراہی میں علماء کے ایک گروپ نے مقامی چیریٹی کی مدد سے قائم کیا ہے جبکہ اس مدرسے کا نام ’دعوت الاسلام ٹریٹیولِنگر یا اسلامک تھرڈ جینڈر اسکول‘ رکھا گیا ہے۔ 50 سے زائد خواجہ سراؤں نے قرآن پاک کی تلاوت کی جبکہ اس موقع پر مدرسے کی 33 سالہ خواجہ سرا طالبعلم شکیلہ اختر کا کہنا تھا کہ وہ اس خوبصورت اقدام کے لیے ناصرف بےحد پُرجوش ہیں بلکہ تمام علمائے کرام کی مشکور بھی ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں