0

اس ادارے کا کوئی فائدہ نہیں شاہد خاقان عباسی نے حکومت سے بڑا مطالبہ کر دیا

کراچی (ویب ڈیسک) مسلم لیگی رہنما و سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ ملک کو چلانے کے لیے قومی احتساب بیورو (نیب) کو ختم کرنا چاہیے۔تفصیلات کے مطابق مسلم لیگی رہنما و سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ دو سال سے پتہ نہیں الزام کیا ہے، نیب والے خود کہتے ہیں کہ آپ لوگوں پر کرپشن کے کیس نہیں ہیں ۔ ملکی معیشت تباہ حال ہے سرمایہ کاری نا ہونے کے برابر ہے، حکومت کے اخراجات بڑھ گئے ہیں اور آمدنی کم ہوگئی ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ سی پیک کے اصل منصوبے کو چھوڑ دیا ہے، قومی اسمبلی کے بل کے ذریعے سی پیک کو نیب سے استثنی دیا گیا۔ جن لوگوں نے سی پیک بنایا ان کو استثنی نہیں ہے۔ ملک کو چلانے کے لیے قومی احتساب بیورو (نیب) کو ختم کرنا چاہیے ، ایک ادارے اورشخص کے لیے قانون کیوں بنائے جارہے ہیں ، اگر نیب کو اتنا ضروری سمجھتے ہیں تو اس میں عدلیہ ، فوج کو بھی شامل کریں اس میں سے ہر شخص جو پاکستان سے ڈیل کرتا ہے اسے شامل کریں تاکہ احتساب کا عمل یکساں ہو ۔
انہوں نے کہا کہ حکومت بتائے کہ سوا دو سالوں میں اس نے کون سی کرپشن پکڑی ہے ، گندم چینی کی کرپشن 400 ارب سے بڑھ گئی ہے یہ کرپشن وزیراعظم اور کابینہ نے کی ہے، ا ن کو پوچھنے والا کوئی نہیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں