0

مولانافضل الرحمان نے کوئٹہ جلسہ میں ایسی بات کر دی کہ پی ڈی ایم رہنماء ہکے بے رہ گئے

کوئٹہ(ویب ڈیسک) اپوزیشن جماعتوں کے اتحاد پی ڈی ایم کے سربراہ نے کہا کہ جعلی حخومت کے خلاف تحریک مزید زور پکڑے گی۔ پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کی جانب سے کوئٹہ میں بھی کامیاب جلسے کی صورت میں سیاسی طاقت کا بھرپور مظاہرہ کیا گیا اور جلسے سے اتحاد کے سربراہ مولانا فضل الرحمان سمیت دیگر قائدین نے خطاب کیا۔پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کوئٹہ میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 18ویں ترمیم اوراین ایف سی ایورڈ میں تبدیلی نہیں ہونےدیں گے۔ پی ڈی ایم این ایف سی ایوارڈ میں صوبے کے حصوں میں کوئی کمی تسلیم نہیں کرے گی۔ کسی نادیدہ قوت کو عوام کے حق پر ڈاکا ڈالنے کی اجازت نہیں دیں گے۔

انہوں ںے کہا کہ پہلےبھی کہاتھاکہ ملک ان نااہلوں کے حوالے نہ کرو۔ جعلی حکمرانوں کے خلاف ہماری تحریک اور زور سے آگے بڑھے گی۔ اس حکومت کے پاس حکمرانی کا قانونی جواز تو پہلے بھی نہیں تھا اور جسٹس فائز عیسی کے ریفرینس کی منسوخی کے فیصلے کے بعد جعلی حکمران اپنا اخلاقی جواز بھی کھو بیٹھے ہیں۔

فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ آج بھی اسٹیبلشمنٹ جعلی حکومت کی پشت پناہی سے دستبراد ہوجائے تو ان کو اپنی آنکھوں پر بٹھانے کے لیے تیار ہیں۔ لیکن عجیب بات ہے کہ میں جرم کروں تو سزائے موت کا حق دار بنوں اور یہ پاکستان کے ایسے مالک ہیں کہ یہ عوام کو جانور سمجھیں اور ان کا خیال ہے کہ ان کے سامنے جو چارہ ڈالیں وہ تسلیم کریں گے تو ہمیں یہ رویہ قبول نہیں ہے۔

انہوں ںے کہا کہ جعلی حکمرانوں کے خلاف ہماری تحریک مزید زور پکڑے گی۔ این آر او کی ضرورت ہمیں نہیں اب انہیں ہے۔ عمران خان اب کس بنیاد پر کرسی پر بیٹھے ہوئے ہیں۔

انہوں ںے تقریر کے آغاز میں مذمتی قرارداد پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ فرانس میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے خاکوں کی اشاعت سے امت مسلمہ کے جذبات مجروح ہوئے ہیں۔ یورپی حکمرانوں کی توہین آمیز رویے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔ فرانس سے سفارتی تعلقات فوری طور پر منسوخ کیے جائیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں